Wed. Jul 17th, 2019

ہم جنس پرست دو خواتین کرکٹرز نے شادی کر لی، دونوں بہت ہی خوش

آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ کی دو ہم جنس پرست خواتین کھلاڑیوں نے شادی کر لی ہے۔ دونوں خواتین کھلاڑیوں نے نیوزی لینڈ کے قوانین کے تحت شادی کی ہے۔

عالمی میڈیا کی رپورٹس کے مطابق آسٹریلیا میں ہونے والی ’ویمن بگ بیش لیگ‘ کی ٹیم ’میلبورن اسٹارز‘ کی 2 خواتین کرکٹرز آسٹریلوی کرکٹر 32 سالہ نکولا ہنکاک اور نیوزی لینڈ کی بلے باز 26 سالہ ہیلی جینسن نے شادی کرکے طویل عرصے سے قائم اپنے تعلقات کو رشتے میں بدلاہے۔

ٹوئٹر پر ڈبلیو بی بی ایل نے دونوں کو شادی کی مبارک باد دیتے ہوئے بتایا کہ دونوں کرکٹرز نے گزشتہ ہفتے شادی کی ہے۔

نئی شادی کے بندھن میں بندھنے والی دونوں کھلاڑیوں نے بھی اپنے اپنے انسٹاگرام پوسٹ کے ذریعے اپنے فالورز کو شادی سے آگاہ کیا ہے۔

نکولا ہنکاک نے اپنے انسٹاگرام پر پارٹنر ہیلی جینسن کے ساتھ تصویر شیئر کرتے ہوئے بتایا کہ انہوں نے 12 اپریل کو شادی کی۔

ہیلی جینسن نے بھی انسٹاگرام پر شادی کی تصاویر شیئر کیں۔

خواتین کھلاڑیوں نے نیوزی لینڈ کے ہم جنس پرست شادی قوانین کے تحت شادی کی ہے کیونکہ نیوزی لینڈ میں ہم جنس پرست شادیوں کو قانونی حیثیت حاصل ہے۔
واضح رہے کہ نیوزی لینڈ نے 2013 میں ہم جنس شادیوں کو جائز قرار دیا تھا۔

اس سے قبل بھی نیوزی لینڈ کی خواتین کھلاڑیوں ایمی سیٹرویٹ اور لی تہاؤ نے بھی گزشتہ برس مئی میں شادی کی تھی۔

ان کے بعد جولائی 2018 میں جنوبی افریقن ٹیم کی سابق کپتان 25 سالہ ڈینے وین نیکرک نے اپنی ٹیم کی ہی 29 سالہ میریزان کیپ سے شادی کی تھی۔

انہی قوانین کے تحت اگست 2018 میں آسٹریلین ٹیم کی سابق نائب کپتان اور 35 سالہ آل راؤنڈر ایلکس بلیک ویل نے برطانوی کرکٹر 32 سالہ لینسی آسکیو سے شادی کی تھی۔

کرکٹ کے علاوہ دیگر کھیلوں کی خواتین ، شوبز، فیشن اور سیاست سے تعلق رکھنے والی چند عالمی شہرت یافتہ خواتین نے بھی ساتھی خواتین سے شادیاں کر رکھی ہیں۔

ان میں امریکی کامیڈین ایلین ڈی گینرز اور آسٹریلوی ماڈل و اداکارہ پورشیا ڈی روسی کی جوڑی بھی مشہور ہے۔ برطانیہ کی ریاست اسکاٹ لینڈ کی رکن پارلیمنٹ رتھ ڈیوڈسن اور جین ولسن کی جوڑی کو بھی تنقید کا نشانہ بنایا جاتا رہا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *