Thu. Jul 18th, 2019

نیب اپیل خارج:کیس کمزور،ریلیف نہیں ،اصل فیصلہ باقی،تجزیہ کار

کراچی : سینئر تجزیہ کاروں نے کہا ہے کہ شریف خاندان کو سپریم کورٹ سے ریلیف ملنے کی وجہ نیب کا کمزور کیس ہے،اپیل خارج ہونا ریلیف نہیں سمجھا جاسکتا، ابھی مرکزی اپیل پر فیصلہ آنا باقی ہے،واضح اکثریت نہ ملنے کی وجہ سے وزیراعظم کو وہی کرنا پڑرہا ہے جو دیگر سیاسی جماعتیں کرتی رہیں،امریکا کی پاکستان میں دلچسپی کم ہونا ہمارے لئے اچھی بات ہے۔ ان خیا لا ت کا اظہار ارشاد بھٹی، بابر ستار، ریما عمر، حفیظ اللہ نیاز ی، مظہر عباس اور حسن نثار نے جیو نیوز کے پروگرام ”رپورٹ کارڈ“ میں میزبان ابصاء کومل سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ پہلے سوال کے جواب میں ریماعمر نے کہا کہ شریف خاندان کو سپریم کورٹ سے ریلیف ملنے کی وجہ احتساب عدالت کا کمزور فیصلہ ہے، سپریم کورٹ نے کنفرم کردیا کہ ہائیکورٹ نے اپنی حدود میں رہتے ہوئے فیصلہ معطل کیا تھا۔حفیظ اللہ نیازی کا کہنا تھا کہ فیصلے سے عدالتوں پر مزید اعتماد بڑھے گا۔ارشاد بھٹی نے کہا کہ نواز شریف کہتے تھے عدلیہ آزاد نہیں ہے آج سپریم کورٹ کی طرف سے ریلیف ملنے کے بعد

ان کا کیا خیال ہے؟ بابر ستار کا کہنا تھا کہ ایون فیلڈ ریفرنس میں احتساب عدالت کا فیصلہ انتہائی کمزور تھا، کنفرم ہو گیا کہ عدالت میرٹ پر فیصلے دے رہی ہے۔مظہر عباس نے کہا کہ نیب کی اپیل خارج ہونا شریف خاندان کیلئے ریلیف نہیں سمجھا جاسکتا، ابھی مرکزی اپیل پر فیصلہ آنا باقی ہے اس کے بعد ہی صورتحال واضح ہوگی۔ دوسرے سوال پی ٹی آئی حکومت پنجاب نے اپنے ہر رکن اسمبلی کیلئے 10کروڑ روپے مختص کرنے کا فیصلہ کرلیا، ڈویلپمنٹ فنڈ کو رشوت کہنے والی تحریک انصاف کا یہ یوٹرن ٹھیک ہے؟ کا جواب دیتے ہوئے ارشاد بھٹی نے کہا کہ یہ فیصلہ بہت مایوس کن ہے، اختیارات کی نچلی سطح پر تقسیم کی دعویدار پی ٹی آئی حکومت کیوں ایم پی ایز کی ترقیاتی اسکیمیں بنوارہی ہے۔بابر ستار نے کہا کہ تحریک انصاف کوئی تبدیلی نہیں لائی روایتی سیاست ہی کررہی ہے ۔ مظہر عباس کا کہنا تھا کہ حکومت کمزور ہے اس کیلئے ایسی اصلاحات کرنا ممکن نہیں جس کے دعوے عمران خان الیکشن سے پہلے کیا کرتے تھے، واضح اکثریت نہ ملنے کی وجہ سے وزیراعظم کو وہی کرنا پڑرہا ہے جو دیگر سیاسی جماعتیں کرتی رہی ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *