Wed. Jul 17th, 2019

حکومت کی جانب سے عوام پر پیٹرول بم

وفاقی حکومت نے آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی (اوگرا) کی سفارش پر پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کا اعلان کردیا۔

حکومت کی جانب سے پیٹرول کی قیمت میں 2 روپے 50 پیسے ، لائٹ ڈیزل کی قیمت میں 2روپے 50پیسے ، مٹی کے تیل کی قیمت میں 4روپے اور ہائی اسپیڈ ڈیزل کی قیمت میں 4 روپے 75 پیسے اضافہ کردیا۔

قیمتوں میں اضافے کے بعد پیٹرول کی نئی قیمت 92 روپے 88 پیسے ، ہائی اسپیڈ ڈیزل کی قیمت 111روپے 43پیسے ، لائٹ ڈیزل کی نئی قیمت 77روپے 53 پیسے اور مٹی کے تیل کی نئی قیمت 86 روپے 31 پیسے فی لیٹر ہوگئی ہے۔

پیٹرولیم مصنوعات کی نئی قیمتوں کا اطلاق جمعرات کی رات 12 بجے سے ہوگا۔

گزشتہ روز اوگرا کی جانب سے حکومت کو ارسال کی گئی سمری میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں 9 روپے 44 پیسے اضافے کی سفارش کی گئی تھی۔

سمری میں پیٹرول کی قیمت میں 4 روپے 71 پیسے ، ہائی اسپیڈ ڈیزل کی قیمت میں 9 روپے 44 پیسے، لائٹ ڈیزل آئل کی قیمت میں 5 روپے 12 پیسے ، مٹی کے تیل کی قیمت میں 8 روپے 6 پیسے فی لیٹر اضافے کی تجویز دی گئی تھی۔

خیال رہے کہ گزشتہ ماہ حکومت کی جانب سے پیٹرول کی قیمت میں 59 پیسے، لائٹ ڈیزل کی قیمت میں 25 پیسے، مٹی کے تیل کی قیمت میں 73 پیسے فی لیٹر کمی کی گئی تھی۔

اس سے قبل جنوری میں حکومت نے عوام کو سالِ نو کا تحفہ دیتے ہوئے پیٹرول کی قیمت میں 4 روپے 86 پیسے، ہائی اسپیڈ ڈیزل کی قیمت میں 4 روپے 26 پیسے، مٹی کے تیل کی قیمت میں 52 پیسے فی لیٹر اور لائٹ ڈیزل کی قیمت 2 روپے 16 پیسے فی لیٹر کم کرنے کا اعلان کیا تھا۔

یاد رہے کہ 31 اکتوبر 2018 کو حکومت نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ساڑھے 6 روپے تک اضافے کا اعلان کیا تھا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *